بسم الله الذي لا يضر مع اسمه شيء في الارض ولا في السماء وهو السميع العليم ما شاء الله بدھ 26 / فروری / 2020,

Instagram

آزادی کیا ہے اور بندگی کیا ہے

09 Aug 2019
آزادی کیا ہے اور بندگی کیا ہے

سید خالد جامعی

 1۔ کیا مغرب کا مطلق آزادی Absolute Freedom آزادی کا تصور اور دعوی تاریخی و تہذیبی لحاظ سے درست دعوی بھی ہے یا یہ ایک بہت بڑا التباس/دھوکہ اور فریب ہے؟

ج۔ بالکل ایک دھوکہ اور فریب ہے۔

 2۔ کیا عہد حاضر کے لوگوں کی کثیر تعداد اس دعوے کو التباس سمجھتے ہیں یا ایک تاریخی و تہذیبی حقیقت  کے طور لیتے اور سمجھتے ہیں؟

ج: التباس اس درجہ ہے راسخ العقیدہ لوگ بھی اس التباس سے بچ نہیں پا رہے وہ اسکو اکثر و بیشتر اسلام سے ثابت کر دیتے ہیں ۔

 3۔کیا مغرب میں آزادی کے عقیدے کے خلاف بغاوت کرنے کی آزادی ہے؟

ج: بالکل بھی نہیں ۔ صرف آزادی اظہار رائے کی آزادی ہے۔۔

 

 4۔ کیا مغرب میں آزادی کےنظام کے ساتھ بندگی کے نظام کو قائم کرنے کی بھی آزادی ہے یا نہیں ہے؟

ج: ناممکن ہے۔ دو مختلف نظ زندگی جن کی بنیاد ہی دو مختلف عقائد ہیں اکھٹے نہیں چل سکتے۔

 5۔ اور اگر قائم کرنے کی آزادی نہیں ہے تو کیا یہ آزادی مطلق آزادی ہے؟

ج۔ مطلق ازادی صرف التباس ہے۔ اس کی کوئی حقیقت نہیں ہے۔

 6۔ اور اگر  یہ مطلق آزادی بھی نہیں  تو کیا یہ پھر اصلا آزادی بھی ہے؟

ج۔ کوئی کسی قسم کی آزادی نہیں۔

 7۔ اور اگر یہ آزادی بھی نہیں تو کیا یہ آزادی کے نام پر کیا اصلا جبر ہے؟ یعنیTyranny of Freedomہے؟

ج۔ بالکل جبر ہے۔

 8۔ اور اگر مغرب کی آزادی اصل میں جبر ہے تو اخر مذہب کو ہی کیوں جبر کہا/ بتایا اور دکھایا جاتا ہے آزادی کو جبر کیوں نہیں کہا جاتا؟

ج: کیونکہ مذہب اس نام نہاد آزادی کی راہ میں ایک بہت بڑی رکاوٹ ہے۔ لہذا اسے جبر کے طور پر پیش کیا جاتا ہے

 9۔  کیادو جبر پر مبنی نظام  چل سکتے ہیں؟

ج۔ ایک ہی چل سکتا ہے۔

 10۔ کیا اسلام اور کفر اکھٹے چل سکتے ہیں؟

ج۔ ناممکن۔

 11۔ کیا اسلام اور کفر کے درمیان پل تعمیر کرنے والے خواب غفلت میں ہیں ؟

ج۔ بالکل ۔۔

 12۔ دو مختلف منہاج علمی کو ملانا کیا ممکن بھی ہے؟

ج۔۔غیر عقلی اور غیر منطقی رویہ۔

 13۔ مغرب آزادی کے عقیدے کے خلاف بغاوت کے نتیجے میں اس کے ردعمل میں کیا سلوک کرتا ہے؟

ج۔ اس نظام سے اٹھا کر باہر پھینک دیا جاتا ہے۔

 14۔آخر کیوں مغرب میں سب سے کم گفتگو۔ سب سے کم تنقید۔ سب سے کم اعتراضات۔ سب سے کم سوالات آزادی کے عقیدے پر کیے جاتے ہیں؟

ج۔ عقیدے پر ایمان لایا جاتا ہے اس پر عمل کیا جاتا ہے۔ اس پر بحث اور تنقید نہیں کی جاتی۔

 15۔مغرب عقیدہ آزادی کے بارے دلیل مانگنے اور اسے قبول نہ کرنے والوں کو جنگوں اور جراثیم کی طرح مارنے کا آخر کیوں کہتا ہے؟

ج: کیونکہ عقیدہ /ایمانیات دلیل سے ماورا ہوتا ہے۔

 

 16۔ کیا اس کا مطلب یہ ہے کہ عقیدہ دلیل سے ماورا ہوتا ہے؟

ج۔ بالکل۔

 17۔ اپنے عقائد پر ایسا زبردست یقین/ایمان آج جس طرح عالم مغرب کو ہے کیا وہ عالم اسلام کو بھی اپنے عقائد اور اپنے ایمانیات پر ہے؟

ج۔ اس پر انتہائی غور و فکر اور ازسر نو تدبرکی ضرورت ہے

 18۔کیا عالم اسلام بھی اپنےایمانیات ،جیسے ایمان باللہ۔ ایمان بالرسالت۔ ایمان بالملائکہ۔ایمان بالکتب۔ ایمان بالاخرت۔اچھی بری تقدیر پر ایمان بھی ایسے ہی زبردست انداز سے رکھتا ہے جیسے عالم مغرب آزادی ۔مساوات اور ترقی پر رکھتا ہے اور عالم اسلام کسی اس کی کوئی دلیل اور کوئی توجیہ پیش نہیں کرتا؟

ج۔  اس پر بھی انتہائی فکر مندی سے غور کی ضرورت ہے۔

 19۔ کیا عالم اسلام کی عالم مغرب سے اصل جنگ دلیل کی جنگ ہے یا  سائنس کی جنگ ہے یا ٹیکنالوجی کی جنگ  ہے یا اسباب اکھٹا کرنے کی جنگ ہے اور یا پھر ایمان کی جنگ ہے اور یقین کی جنگ ہے؟

ج۔ صرف ایمان کی جنگ ہے۔

 *دو متضاد تصورآت خیر اور دو متضاد منہج علم کبھی ایک ساتھ نہیں چل سکتے ایک خیر دوسرے خیر کو بدل دیتا ہے اور ایک منہج علم دوسرے منہج علم کو بدل دیتا ہے ۔

Your Comment